ماں

8th September, 2014

اونچے پیڑ کی شاخ پہ دیکھو
اک چڑیا کا بچا بیٹھا
بھوکا ہے مایوس نہیں ہے
جانتا ہے کہ ماں یے گی

جنگل میں جنگل سے باہر
جہاں مقدر لے جایے گا
وہیں سے لے کر دانا پانی
شام سے پہلے ماں یے گی

سامپ سپولے چیلیں کوے
جان کے دشمن اپر نیچے
اسے بھروسہ ہے کہ پھر بھی
موت سے پہلے ماں یے گی

ماں کیسی انمول ہے نعمت
درد سے بچا جب بھی رویے
دل تڑپتا ہاتھ میں لے کر
بھلے اکیلے ماں آیے گی

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s